جاپانی جوڑے علیحدہ کیوں سوتے ہیں؟ وجہ جان کر آپ جاپانیوں کی عقل پر حیران رہ جائیں گے

چھوٹے چھوٹے مکانات اور اپارٹمنٹس بھی جاپانی جوڑوں کو علیحدہ بستر یا کمروں میں سونے سے نہیں روک سکے۔ یہ کسی طرح کا ان کے ازدواجی زندگی کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں ہے، بلکہ جاپانی جوڑوں کے خیال میں یہ ان کے لئے اچھا ہے۔

سونے کے علیحدہ شیڈول

پہلی جو چیز جاپانی جوڑے کو الگ سونے کا فیصلہ کرنے پر مجبور کرتی ہے وہ کام کے مختلف نظام الاوقات ہیں۔ جب آپ دیر سے گھر آتے ہیں تو اپنے شریکِ حیات کے آرام کو متاثر کرسکتے ہیں یا پھر صبح جلدی جاتے ہوئے بھی اس جگانے کا سبب بن سکتے ہیں جس سے اس کو معیاری آرام میسر نہیں آئے گا- یہی وجہ ہے کہ ایک مختلف کمرے میں رات گزارنا معنی خیز ہے۔ اس سے دونوں افراد کو ایک غیر متزلزل اور صحت مند نیند آئے گی۔

بچے ماؤں کے ساتھ سوتے ہیں

جاپانی مائیں اپنے بچوں کے ساتھ سوتی ہیں اور یہ بہت اہم سمجھا جاتا ہے، لہٰذا باپ کو یہ فیصلہ کرنے کی ضرورت ہوتی ہے کہ وہ ایک ہی بستر کو بانٹنا چاہتا ہے یا کسی دوسرے کمرے میں جانا چاہتا ہے۔ یہاں تک کہ سائنس نے یہ ثابت کیا ہے کہ شریک نیند والدین اور بچوں کو زیادہ آرام دہ نیند لینے میں مدد دیتی ہے۔ اس سے بچے کو مستحکم درجہ حرارت اور دل کی شرح برقرار رکھنے میں مدد ملتی ہے اور یہ عمل اچانک بچوں کی اموات سنڈروم کے امکانات کو کم بھی کرتا ہے۔ نیز ، اس سے بچے کی خود اعتمادی میں بہتری بھی آتی ہے۔

الگ سونے کا مطلب امن

اگرچہ بہت سے جوڑے جو اکیلے سونے لگتے ہیں ان کے بارے میں سجمھا جاتا ہے کہ ان کے درمیان تعلقات کشیدہ ہیں لیکن جاپانی اسے مختلف انداز سے دیکھتے ہیں۔ وہ اپنی نیند کی بہت قدر کرتے ہیں اور وہ سوتے وقت پریشان نہیں ہونا چاہتے ہیں۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ انہیں خراٹے ، بے چین نیند ، لات مارنے والے فرد کی ضرورت نہیں ہے اور وہ اسے پسند نہیں کرتے ہیں- اگرچہ کچھ لوگوں کو مختلف کمروں میں سونے کا موقع نہیں ملتا ہے ، پھر بھی وہ خواہش کرتے ہیں کہ وہ بھی خوبصورت نیند حاصل کر سکیں۔ .

Leave a Reply

Your email address will not be published.