124

سعودی عرب کے قیام کو 90 سال مکمل

سعودی حکومت نے پاکستان کو سعودی عرب کیلئے مزید اضافی پروازیں چلانے کی اجازت دے دی

قومی ائیرلائن پی آئی اے کی جانب سے مملکت کیلئے 21 مزید پروازیں چلائی جائیں گی، ہر پرواز میں 25 فیصد نشستیں خالی چھوڑنے کی پابندی بھی ختم کیے جانے کا امکان

اسلام آباد ( 23 ستمبر2020ء) سعودی حکومت نے پاکستان کو سعودی عرب کیلئے مزید اضافی پروازیں چلانے کی اجازت دے دی، قومی ائیرلائن پی آئی اے کی جانب سے مملکت کیلئے 21 مزید پروازیں چلائی جائیں گی، ہر پرواز میں 25 فیصد نشستیں خالی چھوڑنے کی پابندی بھی ختم کیے جانے کا امکان۔ میڈیا رپورٹس میں فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق پاکستان سے سعودی عرب کی پروازوں میں بے انتہاء رش ہونے کی وجہ سے سعودی حکومت نے پاکستان کو مزید اضافی پروازیں چلانے کی اجازت دے دی ہے۔بتایا گیا ہے کہ سعودی حکومت کی جانب سے اجازت دیے جانے کے بعد پی آئی اے کی جانب سے مملکت کیلئے 21 اضافی پروازیں چلائی جائیں گی۔ اس سے قبل صرف 13 اضافی پروازوں کی اجازت ملی تھی، جبکہ پی آئی اے نے 26 اضافی پروازوں کی اجازت طلب کی تھی۔اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے بھی نوٹس لیتے ہوئے وزارت خارجہ کو سعودی حکام سے بات کرنے کی ہدایت کی تھی۔ اس حوالے سے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سمندر پار پاکستانیز سید ذوالفقار بخاری نے بدھ کو سعودی نائب وزیر برائے انسانی وسائل عبداللہ بن نصیر ابو السانی سے ویڈیو لنک رابطہ کیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے معاون خصوصی ذوالفقار بخاری نے سعودی عرب جانیوالے مسافروں کو ٹکٹ کے حصول میں مشکلات، محدود پروازوں کی وجہ سے ایئر لائنز میں نشستوں کی عدم دستیابی اور کرایوں میں اضافہ جیسے معاملات اٹھائے۔ انہوں نے ویزا کی میعاد کی تاریخ 30 اکتوبر 2020ء تک بڑھانے، ایئر لائنز کو مزید فلائٹس کی اجازت دینے کی درخواست کی۔ انہوں نے کہا کہ پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے کرایوں میں اضافہ ہوا ہے، کام کرنے والے کارکنوں کا بہت دباؤ ہے جو واپس سعودی عرب جانا چاہتے ہیں۔ زلفی بخاری نے کہا کہ پروازوں کی عدم دستیابی کی وجہ سے سعودیہ میں کام کرنے والے چٹھی پر آئے پاکستانی پھنس چکے ہیں، سعودی ایئر کیریئر اور پی آئی اے دونوں کی پروازوں میں اضافہ کی اجازت دی جائے۔

انہوں نے کہا کہ اقامے کی مدت میں کم ازکم ایک ماہ کی توسیع کی جائے، سعودیہ میں ملازمت میں تبدیلی کرنے کے عمل کو بھی آسان بنانا مفید ہوگا۔ اس موقع پر سعودی نائب وزیر برائے انسانی وسائل عبدللہ بن نصیر ابو السانی نے ہفتہ وار مشترکہ وزارتی اجلاس میں پروازوں اور اقاموں کا معاملہ اٹھانے کا وعدہ کیا۔ سعودی وزیر نے کہا کہ سعودی وزارت تجارت، داخلہ اور انسانی وسائل کی آیندہ مشترکہ کمیٹی میں معاملہ پیش کریں گے، 25 فیصد نشستیں خالی چھوڑنے کی وجہ سے بھی پروازوں پر بوجھ ہے۔ اس پالیسی پر نظرثانی کر رہے ہیں، جلد تمام نشستوں پر مسافروں کو آنے کی اجازت ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ریکارڈ کا جائزہ لے کر اقاموں کی میعاد کو بڑھانے کا فیصلہ بھی اجلاس میں پیش کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں